Breaking News

اپوزیشن نے استعفیٰ دیدیا تو وزیر اعظم کو کیا فرق پڑے گا ؟ مریم نواز کون سی سنگین غلطی کر رہی ہیں ؟ پیپلز پارٹی کے استعفوں سے متعلق اعتزاز احسن کا سنسنی خیز انٹر ویو

پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما اور معروف قانون دان اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ اپوزیشن سینیٹ سے استعفوں کا اتنا بڑا تحفہ کبھی بھی نہیں دے گی اور اگر ایسا کیا تو یہ بہت بڑی حماقت ہوگی۔ ایک ٹی وی انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ آئین میں لکھا ہے کہ اگر اسمبلی تحلیل نہ ہوئی تو آئین کی رو سے عمران خان ہی

وزیراعظم رہیں گے۔ اعتزاز احسن نے کہا کہ حکومتیں جلسے جلوس سے نہیں جاتیں بلکہ صرف تیسری طاقت ہی اُنہیں گراتی ہے لیکن ن لیگ نے تو تیسری طاقت کے ساتھ بھی ٹکر لی ہے۔ ان سے سوال کیا گیا کہ اگر ڈیڑھ سو افراد استعفے دیتے ہیں تو ضمنی الیکشن ہو گا یا نیا الیکشن ہو گا؟ اس پر اعتزاز احسن کا کہنا تھا کہ اتنے استعفوں پر اسمبلی تحلیل نہیں ہوتی، ان نشستوں پر ضمنی انتخابات ہی ہوں گے اور عمران خان وزیراعظم رہیں گے کیونکہ آئین کے مطابق حکومت کو اپنی اکثریت دکھانے کے لیے 172 اراکین اسمبلی کی حمایت چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ اگر اسمبلی میں کوئی شخص کورم میں کمی کی نشاندہی نہیں کرتا تو اسمبلی میں جتنے کم لوگ بھی بیٹھے ہوں وہ چلتی رہے گی ۔انہوں نے پی ڈی ایم کو کورونا کی وجہ سے اپنے جلسے جلوس ملتوی کرنے کا بھی مشورہ دیا۔ رہنما پیپلزپارٹی کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز ملکی سیاست کو تصادم کی طرف لے کر جا رہی ہیں لیکن ان کا منصوبہ کامیاب ہوتا نظر نہیں آرہا ، اپوزیشن جماعتوں کو بھی سوچنا چاہیئے کہ نوازشريف کے بیانیے میں پی ڈی ایم کا مفاد نہیں ہے۔انہوں نے انٹرویو میں کہا کہ استعفے دینے کا ایٹم بم چلانے کا فیصلہ مسلم لیگ ن اکیلے اپنے طور پر کیسے کر سکتی ہے؟ جس بھی سیاسی جماعت کو زیادہ شوق ہے تو وہ اپنے استعفے جمع کرائے لیکن میری ذاتی رائے میں پیپلزپارٹی کو استعفوں کی حد تک نہیں جانا چاہیئے۔

Sharing is caring!

About admin

Check Also

چقندر کےاستعمال سے آپ جسم سے زہریلا مواد نکال سکتے ہیں، مگر کس طرح جانیں؟

نیویارک(این این ایس نیوز)جسم میں موجود زہریلے مواد سے نجات کے لئے لوگ مہنگے علاج …